دہلی میں آلودگی کی سطح پانچ سالوں میں آج سب سے کم

دہلی میں آلودگی کی سطح پانچ سالوں میں آج سب سے کم

سڑکوں پر پانی چھڑکنے کے لیے آج سے150موبائل اینٹی اسموگ گنیں نصب،تمام70اسمبلیوں میں دو موبائل اینٹی اسموگ گنوں سے چھڑکاؤ کیا جائے گا:گوپال رائے

نئی دہلی، 25 اکتوبر(سیاسی تقدیر بیورو)دہلی کے وزیر ماحولیات گوپال رائے نے کہا کہ دہلی میں آج آلودگی کی سطح دیوالی کے بعد پانچ سالوں میں سب سے کم ہے۔ دہلی میں پانی چھڑکنے کے لیے آج سے 150 موبائل اینٹی اسموگ گنیں لگائی گئی ہیں۔ تمام 70 اسمبلیوں میں دو موبائل اینٹی اسموگ گنز سے اسپرے کیا جائے گا۔ دہلی کے وزیر ماحولیات گوپال رائے نے کہا کہ میں دہلی کے لوگوں کو مبارکباد دینا چاہتا ہوں کہ آپ کے تعاون سے اس دیوالی کے اگلے دن گزشتہ سال کے مقابلے آلودگی میں 30 فیصد کمی آئی ہے۔ آج آلودگی گزشتہ پانچ سالوں میں سب سے کم ہے۔ ایئر کوالٹی انڈیکس (AQI) گزشتہ سال 462 کے مقابلے میں آج323 ہے۔ دہلی کے لوگ اس سال دیوالی پر سپریم کورٹ کے حکم کی تعمیل کرتے ہوئے پٹاخے کم ہی جلاتے ہیں۔ اس کے لیے میں ان کا شکریہ ادا کرتا ہوں۔ آج آلودگی کی سطح گزشتہ پانچ سالوں میں سب سے کم ہے۔ AQI 2018 میں 390، 2019 میں 368، 2020 میں 435، 2021 میں 462 تھا۔ اس سال آج AQI 323 ہے۔انہوں نے کہا کہ دہلی حکومت عوام کے تعاون سے آلودگی کو کم کرنے میں کامیاب ہوئی ہے۔ حکومت آلودگی کو کم کرنے کے لیے بہت سی مہمیں چلا رہی ہے جیسے اینٹی ڈسٹ مہم، بائیو ڈی کمپوزر کا چھڑکاؤ، درخت لگانے کی مہم، پٹاخوں کے بارے میں بیداری مہم وغیرہ۔ اے کیو آئی کے پیش نظر آج سے دہلی بھر کی سڑکوں پر150 موبائل اینٹی اسموگ گنز سے پانی چھڑکنے کی مہم شروع کر دی گئی ہے۔ دہلی کے تمام 70 اسمبلی حلقوں میں دو موبائل اینٹی اسموگ گنوں سے چھڑکاؤ کیا جائے گا۔ اس کے ساتھ ہی ہر ہاٹ اسپاٹ پر ایک اضافی موبائل اینٹی اسموگ گن نصب کی جا رہی ہے۔ گزشتہ سال 10 موبائل اینٹی اسموگ گنوں کا اسپرے کیا گیا تھا۔ یہ موبائل اینٹی اسموگ گن صبح 10 بجے سے شام 6 بجے تک سڑک پر پانی کا چھڑکاؤ کرے گی۔ ایک اسموگ گن ایک طرف 10 کلومیٹر تک پانی کا چھڑکاؤ کرے گی۔ وزیر ماحولیات نے کہا کہ حکومت کے اقدام سے پنجاب میں پرالی جلانے کی تعداد میں کمی آئی ہے۔ پچھلے سال دیوالی کے دن پنجاب میں پرالی جلانے کے واقعات 3032 تھے۔ جبکہ رواں سال 1019 واقعات منظر عام پر آئے ہیں۔ ہریانہ میں گزشتہ سال دیوالی کے موقع پر پرالی جلانے کے 228 واقعات رپورٹ ہوئے تھے۔ رواں سال 250 واقعات منظر عام پر آئے،جبکہ اتر پردیش میں گزشتہ سال 123 اور اس سال 215 واقعات رپورٹ ہوئے ہیں۔